34

100 بلوچ فیریوں نے کمانڈر کے ساتھ ریاست کے سامنے ہتھیار ڈال دیے-

کوئٹہ: ہفتہ کے روز 100 سے زائد بلوچ باغیوں نے خضدار میں انتظامیہ کے سامنے ہتھیار ڈال دیے-

خضدار میں استقبالیہ تقریب منعقد ہوا جسمیں قلات ڈویژن کے کمشنر ہاشم غلزائی خضدارڈپٹی کمیشنر قیصر خان ناصربریگیڈیر راحت ملک اور دیگر حکام نے ان کوخیر مقدم کہا – اور ان کے جنگ ختم کرنے کے فیصلے کی تعریف کی –

100 سے زائد فراری جن کاتعلق، خضدار اور آواران سے ہیں ، حکومتی نمائندوں کے سامنے اسلحہ ڈال دیا اور پاکستان کی بہتری کے لیے کام کرنے کا اعلان کیا- فراریوں نے ہاتھوں قومی پرچم کو لیے پاکستان کے حق میں پاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے-”

t>

قلات کمشنر اور بریگیڈیئر ملک نے کہا، “بعض قوم پرستوں دشمنوں سے فنڈز لینےبلوچستان کے نوجوانوں کو ریاست کے خلاف ہتھیار اٹھا لینے کے لئے مجبور کیے گئے- لیکن ہمارے نوجوانوں نے پاکستان کے لیے دشمن کے شیطانی عزائم کو سمجھ لیا ہے-

انہوں نے کہا، “پاکستان کی جڑ اسلام پر مبنی ہے اسلامی ثقافت کے بنیاد پر ، تمام مسلمانوں کو یکساں حقوق حاصل ہیں اور وہ لوگ جو اب بھی پہاڑوں میں ہیں – مرکزی دھارے شامل ھو جائے ملک کی بہتری کے لئے کام شروع کریں –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں