وزیرداخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی 87

وزیرداخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی کے صبر کا پیمانہ لبریز افغان مہاجرین کی رخصتی کے بارے میں اہم اعلان –

کوئٹہ :وزیرے داخلہ سرفراز بگٹی کا افغان مہاجرین کی ملک واپسی کے بارے میں اہم پریس کانفرنس انہوں نے کہا کہ گزشتہ دنوں جن لوگوں نے بم دھماکے کیے وہ target killing گروپ تھا -جو چار لوگ تھے جن میں ایک عبدللہ شاہ کا تعلق افغانستان ،احمداللہ کندھار ،نور محمّد کندھار اور محمّد شفیح کا تعلق پشین پاکستان سے ہیں -ان لوگوں نے ہمارے معصوم لوگوں پر حملے کیے ہیں یہ تمام وہ لوگ ہے جو یہاں پر مختلف کمپس میں رہے ہیں -انہوں نے کہا کہ ہم نے افغانستان کے ساتھ بھائی چارے میں ان لوگوں کا بحیثیت دوست، بحیثیت مسلمان خیال رکھا –
لیکن کتنے دکھ کی بات ہے کہ جو لوگ یہاں پر پلے وہ ہمارے یہاں معصوم لوگوں کے قتل میں شامل ہے انہوں نے کہا کہ میں انٹرنیشنل کمیونٹی اور افغان خکومت کو کہتا ہوں کہ اب بہت ہو گیا -اب افغان مہاجرین کو واپس جانا پڑے گا -اگر وہ لوگ عزت سے جائنگے یا انٹرنیشنل کمیونٹی ان کو عزت سے واپس لے جاتی ہے تو بہت اچھی بات ہے نہیں تو بلوچستان کے عوام ان کو دھکے دے کر باہر نکال دے گی – انہوں نے کہا کہ یہ لوگ ہمارے امن کو خراب کر رہے ہیں – RAW اور NDS ان لوگوں کو سپورٹ کرتی ہیں -انہوں نے کہا (RAW(NDS کا ایک سیٹلائٹ ہے – اور وہ بلوچستان کے ذریعہ پاکستان کو غیر مستحکم کرنا چاھتے ہیں – انہوں نے کہا کہ ہماری ایک ناکامی نادرا بھی ہے جس نے ان لوگوں کو 20 اور 30 ہزار روپے میں جغلی شناحتی کارڈ جاری کۓ ہیں – تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ موجودہ جو DG نادرا ہے ان کی جو کوشش ہے جغلی کارڈز بلاک کرنے میں ، میں ان کہ بلوچستان خکومت کی طرف سے شکریہ ادا کرتا ہوں- وہ بوہت اچھا کام کررہے ہیں – انہوں نے کہا کہ حالت یہ ہے کہ افغانستان کے فوج اور پولیس کے لوگ پکڑے گۓ ہیں جن کی پوری فیملی کے پاس پاکستانی جغلی شناختی کارڈز پکڑے گۓ ہیں –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں