Nawaz Sharif 15

سابق وزیراعظیم نواز شریف کے ممبئی حملوں میں ملوس دہشت گردوں کے مطلق بیان کے بعد پاکستا ن کے لے مشکلات مزید بڑھ گئی ہے

ہندوستان کے وزیر اعظم مودی نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے دہشت گردوی کے مطلق بیان پر پاکستان کو دہشت گردی کو فروغ دینے والا ملک کرار دینے کہ مطالبہ کیا
نئی دہلی : بھارتی وزیر اعظم نے پاکستان کے سابق وزیراعظم نواز شریف کے اس بیان پر کہ بھارت میں ٢٠٠٨ میں ہونے والے حملوں میں ملوث دہشت گرد پاکستان سے گۓ تھے) سے دباؤ بڑھ گیا ہیں پیر کو کا نگرس نے مطلبہ کیا ہے کہ وزیراعظم اور حکومت یہ یقینی بنایےکے پاکستان کو ایک دہشتگرد فروغ رہنے والا ملک کرار دیا جائے
کانگریس کے ترجمارندیف سنگھ سرجیوالا نے وزیراعظم سے مطالبہ کیا ہےکے وہ اس بات کو یقیننی بنانےکے لئے حوصلہ رکھے یے کے 11-26کا مقدمہ بن االاقوامی ایجنسیوں کی رہنمائی کے تحت ھو یا بھارت کے حوالے کیےجائے نریندر مودی جس کو سابق وزیراعظم نواز شریف نے گھر پہ دعوت پر بلایا تھا کی حکومت یہ یقین بناہے گی کہ پاکستان کو عالمی برادری میں دہشتگردی کو سپورٹ کرنے والا ملک قراردیا جائے گا
جس کا نتیجہ سول. فوجی اور .مغاشی پابندیوں کی صورت میں ہوگا انہوں نے کہا کہ ہمارا دوسراسوال 56 انچ چوڑے سینے والے مودی سے یہ ہےکہ وہ اس بات کا حوصلہ دیکھاۓ کہ 11- 26 کے حملے میں ملوث دہشتگردوں کا مقدمہ یقینی بناۓ جس کی پاکستان میں نا مناسب کوشش کی گئی نہ سزا ہوئی نہ ہندوستان کے حوالے کیے گۓ
دوسری نواز شریف نے اپنے بیان کا دفاع کیا ہے ایک تنظیم لشکرطیبہ کے ٢٠٠٨ کے ممبئی حملوں میں کردار کے بارے میں جس میں ١٦٦ افراد مارے گۓ تھے اتوار کو ایک پاکستانی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوے نواز شریف نے کہا کہ دہشت گرد تنظیمیں پاکستان میں سرگرم ہے اور غیر ریاستی عناصر کے سرحد پار جانے کی اجازت کی پالسی اور ممبئی میں لوگوں کے قتل کے بارے میں سوال کیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں