Turkey 152

ترکی نے امریکا اور یورپ کو روس S-400 ایرڈیفنس سیسٹم خریدنے کے بعد ایک اور جھٹکا دینے کی تیاری کرلی – .روس خوشی سے نہال –

ماسکو – ینی سفاک اخبار نے اتوار کو خبر دی ہے ک ترکی کا روس سے 400 S میزائل سسٹم کی خریداری کے جواب میں، امریکا ایف 35 جیٹ جہازوں کی ترسیل کو معطل کرنے کا ارادہ رکھتا ہے- جس کے بعد انقرہ کا روس سے 57- SU لڑاکا طیاروں کے خریدنے کا امکان ہے.

ذرائع کے مطابق، روسی صدر ولادیمیر پوتن کے 3 اپریل کو دورے ترکی کے دوران ملٹری سافٹ ویئر اور ٹیکنالوجی کے تبادلے تبادلہ خیال کیا- جس میں سیخوئی SU-57 جیٹوں کی ترسیل میں شامل ہوسکتی ہے، ایس یو -57، ایف -35 کا براہ راست مقابل ہے – ینی صفک اخبار نے رپورٹ کیا ہے –

گزشتہ دسمبر روس اور ترکی نے انقرہ کو 400 -S فضائی دفاعی نظام فراہم کرنے کے لئے ایک قرض معاہدے پر دستخط کیے- اس معاہدے سے ترکی اور ریاست ہائے متحدہ کے درمیان اختلافات پیدا ہو چکے ہیں- جس کے نتیجے میں امریکہ نے انقرہ کے خلاف پابندیاں لگانے کی دھمکی دی ہے کیونکہ واشنگٹن کا خیال ہے کہ اسلحہ نیٹو کے دفاعی نظام سے مطابقت نہیں رکھتی – جمعرات کو، پوتین نے امریکہ پر شدید تنقید کی جو ترکی پر دباؤ ڈال کر روس کے ساتھ معاہدہ حتم کرنے کرنے کی کوشش کر رہا ہے-

t>

جمعرات کو، امریکی سینیٹ کے مسلح سروسز کمیٹی نے سالانہ دفاعی پالیسی کے بل کے اپنے وژن کی تفصیلات جاری کی ہے – مسودہ، میں خاص طور پر، یہ مطالبہ کیا گیا ہے کہ روس کے 400 -S میزائل ڈیفنس کی خریداری کے ردعمل میں ترکی کو ایف 35 لڑاکا طیاروں کی ترسیل کو معطل کیا جانا چاہئے-

روس کے سیخوئی 57 پانچویں نسل لڑاکا طیارہ ہے – جو کثیرالمقصد فضائی اور حملے کی صلاحیت رکھتا ہے – ایک واحد سیٹ، ڈبل انجن سٹیلتھ ٹیکنالوجی کی حامل جہاز ہے – یہ اعلی درجے کی ایونیوکس سسٹم اور جدید ترین ہتھیاروں سے لیس ہے- جہاز نے 2010 میں پہلی پرواز کی تھی اور اب بھی اس پر تجربات کیے جا رہے ہیں –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں